حالیہ مضامین

معاشرتی ہم آہنگی

معاشرتی ہم آہنگی

تحریر: سعدیہ عندلیب

یہ حقیقت ہے کہ کہ آج کا معاشرہ اپنے حقیقی معنی بھول کر بالکل کھوکھلا ہو چکا ہے۔ اگر ہم اپنے اندر برداشت کا مادہ پیدا کر لیں اور اپنی اخلاقیات بلند کر لیں تو ہم اپنا معاشرہ بدل سکتے ہیں ۔ کسی پر تشدد کرنا یا غیر اخلاقی حرکت کرنا نامناسبب اور قابل مذمت ہے ۔

مزید پڑھیں

او یار کچھ نہیں ہوندا

او یار کچھ نہیں ہوندا

تحریر: حسن نصیر سندھو

ملک صاحب کا شمار ان کامیاب لوگوں میں ہوتا ہے۔ جو زندگی میں پچھے رہ جاتے ہیں، اور ان کی سوچ آگے نکل جاتی ہے۔

مزید پڑھیں

چائے

چائے

تحریر: حسن نصیر سندھو

غریب لوگوں کی ہائے، فارغ لوگوں کی رائے اور کسی کے حصے کی چائے کبھی نہ لیجیے ورنہ انجام اچھا نہ ہوگا۔

مزید پڑھیں

عورت کہاں محفوظ ہے !

عورت کہاں محفوظ ہے !

تحریر: ملک محمد یامین

جو لوگ یہ کہتے ہیں لباس مسئلہ ہے تو وہ تین سال کی معصوم بچیوں اور بچوں سے زیادتی کا کیا جواز پیش کرتے ہیں؟

مزید پڑھیں

تمہارے نام کچھ دل کی باتیں

تمہارے نام کچھ دل کی باتیں

تحریر: ثنا بتول درانی

یہ کوئی دریافت نہیں ہے ایک احساس ہے جس نے میرے من کو ہلکا کر دیا ہے۔ کیا کہتے ہو مجھے تمہارا شکریہ ادا کرنا چاہیے کہ تم نے ایک در مجھ پہ وا کر دیا۔

مزید پڑھیں

سر سلامت رہیں ٹوپیاں بہتیری

سر سلامت رہیں ٹوپیاں بہتیری

تحریر: رابعہ سرفراز چوہدری

صدف، اس استحصالی نظام میں بدقسمتی سے پیدا ہونے والی عورت تھی، جس کی ذرا برابر کوئی رائے تھی نا امنگ کی اہمیت کہ آیا وہ کیا چاہتی ہے؟ پہلے اس کی پیدائش پر ہی اس کی زندگی کا اتنا بڑا فیصلہ کر دیا جاتا ہے۔ جوں جوں وہ پروان چڑھتی ہے، اس کو بس آس پاس سے ایک ہی بات سننے کو ملتی ہے کہ اس معاشرے میں عورت ہونے کے ناطے اس کی زندگی کے پہلے اور آخری مقاصد صرف شادی اور اطاعت ہیں۔

مزید پڑھیں