حالیہ مضامین

مقدمہ بنا کر شرمندگی کے سوا حاصل ہی کیا ہوگا؟

تحریر: رابیہ سرفراز چوہدری

میرے قدم چلتے چلتے رک گئے، میں اور میری دو سہیلیاں پلٹ گئیں، اس سٹال نما دکان کے سامنے کھڑے باریش صاحب سے ہم نے شکایت کر ڈالی کہ حضرت آپ کا دوکاندار اس عورت کے ساتھ بدفعلی کر رہا ہے اور اس بے گانہ عورت کو اس بات کا علم نہیں جس کا ذہنی توازن تک ٹھیک نہیں۔

مزید پڑھیں

ہمارا جذبۂ ایمانی اور مندر

تحریر: ذیشان حیدر

اقلیتوں کی مذہبی عبادت گاہوں کے خلاف برسر پیکار یہ ہجوم 'مغرب' میں مساجد کی تعمیر پر مٹھائیاں بانٹتا ہے اور اسے اسلام اور عالمی قوانین کی فتح قرار دیتا ہے

مزید پڑھیں

سعادت مر گیا مگر منٹو زندہ ہے

تحریر: طلحہ محمود راجپوت

میرا قلم تو عدالت میرے ضمیر کی ہے

مزید پڑھیں

کشمیر کے نونہال بسکـٹوں سے سہلائے نہیں جاتے

تحریر: رابیہ سرفراز چوہدری

ہماری برمش ہو یا ہمارا عیاد، ظلم کو ظلم کی تعریف سے اس لئے حذف نہیں کیا جاسکتا کہ ظالم ہمارا اپنا تھا۔ آواز پہنچے یا نہ پہنچے، سرکشی کی آواز بلند ضرور کرنی چاہیئے یہی انسان کے زندہ ہونے کی آخری دلیل ہوتی ہے۔

مزید پڑھیں